وفاقی حکومت نے لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ کر لیا

وفاقی حکومت نے لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے پی ٹی آئی ارکان اسمبلی سے گفتگو

84

اسلام آباد (اوصاف ٹی وی) وفاقی حکومت نے لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے پی ٹی آئی ارکان اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن میں بتدریج نرمی لائی جائے۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا۔معاشی صورتحال ، زمینی حقائق مدنظر رکھتے ہوئے اہم فیصلے کرنے جا رہے ہیں۔ عام آدمی کے مسائل کے پیش نظر لاک ڈاؤن میں بتدریج نرمی کی جائے گی۔

کورونا سے حفاظتی انتظامات سے متعلق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حفاظتی اقدامات پر مبنی جامع ایس او پیز تیار کر لئے گئے ہیں۔ حکومت مشکلات کے باوجود غریب افراد کی مدد کیلئے کوشاں ہے او 125 ارب روپے ان میں تقسیم کئے گئے ہیں۔ جو کہ نہایت شفافیت سے 12 ہزار روپے کی فراہمی کی گئی۔

وزیراعظم عمران خان نے تحریک انصاف کے ارکان اسمبلی کو ہدایت کی کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ ہر مستحق خاندان تک حکومت امداد پہنچ رہی ہے۔

واضح رہے اس سے قبل پنجاب اور سندھ حکومت نے مارکیٹس اور کاروبار مرحلہ وار کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ وفاق کی اجازت ملتے ہی کاروبار کھول دیں گے۔ بازاروں کو مخصوص دن اور مخصوص اوقات میں کھولنے کی تجویز ہے۔اس کےلیے صنعت کاروں اور تاجر برادری کو وضع کردہ ہدایات پر عمل کرنا ہوگا۔بلوچستان میں 5 مئی کے بعد لاک ڈاؤن ختم ہونے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔

سندھ میں مارکیٹیں کھولنے کے لیے سفارشات اور تجاویز تیار کی جارہی ہیں۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی زور دیا ہے کہ عوام لمبے عرصے تک لاک ڈاؤن برداشت نہیں کر پائے گی۔صوبائی حکومت نے عید سے پہلے کاروبار کھولنے کی تیاریاں شروع کردی ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ کاروبار چلنے سے ہی عام آدمی کو روزگار ملے گا، کرونا کے باعث سب سے زیادہ مشکلات کا شکار عام آدمی ہے۔ تاہم وفاقی حکومت کی جانب سے بھی لاک ڈاؤن میں نرمی کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.