کورونا کی ویکسین بالکل مفت دستیاب ہو گی

کورونا کی ویکسین بالکل مفت دستیاب ہو گی، مجھے امید ہے کہ کورونا وائرس کی ویکسین رواں سال کے آخر تک تیار کر لی جائے گی۔

111

واشنگٹن (اوصاف ٹی وی) کورونا کی ویکسین بالکل مفت دستیاب ہو گی، مجھے امید ہے کہ کورونا وائرس کی ویکسین رواں سال کے آخر تک تیار کر لی جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امکان ظاہر کیا ہے کہ کورونا وائرس کی ویکسین سال 2020ء کے اختتام تک تیار کر لی جائے گی اور بالکل مفت دستیاب ہوگی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جمعہ کے روز وائٹ ہاؤس میں پریس کانفرنس کے دوران امریکی صدر کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی ویکسین رواں سال کے آخر تک تیار ہو جانے کا امکان ہے اور اس ویکسین کی تقسیم مفت ہوگی۔

گلیکسو ویکسین ڈویژن کے سابقہ ہیڈ مونسف سلوئی جنہیں صدر ٹرمپ نے کورونا وائرس ویکسین کی تیاری کے لیے ریاستی کوششوں کا چارج بھی دے رکھا ہے نے بتایا کہ حالیہ ڈیٹا نے انہیں مزید خود اعتمادی بخشی ہے کہ کورونا وائرس کی ویکسین 2020ء کے آخر تک تیار ہو جائے گی۔

اس سے قبل امریکی صدر نے کورونا وائرس کی تیاری کے سلسلے میں ‘آپریشن وارپ سپیڈ‘ شروع کرنے کااعلان بھی کیا۔

 

صدر ٹرمپ نے کہا کہ آپریشن وارپ سپیڈ کا مقصد ویکسین پرکام کرنا، اس کی تیاری کرنا اور کورونا وائرس کی مصدقہ ویکسین کے طور پر فروخت کو جلد سے جلد ممکن بنانا ہے۔ دوسری جانب ایک برطانوی تمباکو کمپنی برٹش امریکن ٹوباکو کی جانب سے دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس نے تمباکو کے پودے سے ایک تجرباتی ویکسین تیار کی ہے۔ اس ویکسین کے کلینیکل ٹرائل کے دوران مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں اور اب جلد اس ویکسین کا انسانوں پر بھی تجربہ شروع کر دیا جائے گا۔

کمپنی کے ماہرین کا دعویٰ ہے کہ ان کی جانب سے اختیار کیے گئے طریقہ کار سے تجرباتی ویکسین کی کم وقت میں تیاری ممکن ہو پائی ہے۔ برطانوی کمپنی کی جانب سے تمباکو کے پودے سے تجرباتی ویکسین تیار کر لینے کا دعویٰ کر دیا گیا ہے تاہم سائنسدان اس حوالے سے فی الحال کوئی رائے دینے سے قاصر ہیں۔ یہاں یہ بات بھی قابل غور ہے کہ ماہرین بتا چکے ہیں کہ سگریٹ نوشی کورونا وائرس کے خطرات کو بڑھا دیتی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.